bodrum escort escort bodrum yalıkavak
Home / Latest News / بھارت میں نصابی کتاب میں شائع متنازع تصویر نے نیا ہنگامہ کھڑا کردیا

بھارت میں نصابی کتاب میں شائع متنازع تصویر نے نیا ہنگامہ کھڑا کردیا

بھارت کے ایک نجی اسکول میں چھٹی جماعت کی کتاب میں شائع ہونے والی متنازع تصویر نے نیا ہنگامہ کھڑا کردیا ہے۔

بھارت کے نجی اسکول میں چھٹی جماعت کی سائنس کی کتاب میں ایک متنازع تصویر شائع ہوئی جس میں شور پیدا کرنے کے ذرائع کی بذریعہ تصویر نشاندہی کی گئی جب کہ تصویر کے ساتھ شور کی علامات کی بھی نشاندہی کی گئی ہے۔

تصویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک شخص کانوں پر ہاتھ رکھ کر شور کی وجہ سے اپنے غصے کا اظہار کر رہا ہے جب کہ ریل، جہاز اور گاڑیوں کو شور پیدا کا سبب قرار دیا گیا اور ساتھ ہی مسجد کو بھی شور کی وجہ بتایا جارہا ہے۔

متنازع تصویر کی نشاندہی پر تعلیمی حلقوں سمیت لوگوں کی جانب شور کی وجوہات میں مسجد کی تصویر ڈالنے پر شدید تنقید کی جارہی ہے جب کہ سوشل میڈیا صارفین نے اسے مخصوص مذہب کو نشانہ بنایا جانا قرار دیتے ہوئے آن لائن پٹیشن لانچ کی ہے جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کتاب سے فوری طور پر متنازع تصویر کو ہٹایا جائے۔

دوسری جانب انڈین اسکول سرٹیفکٹ کونسل کے چیف ایگزیکٹو گیری آرتھن کا کہنا ہے کہ اگر کسی بھی اسکول میں قابل اعتراض کتاب پڑھائی جارہی ہے تو یہ ناقابل قبول ہے جب کہ اسکول اور پبلشرکو یقین دہانی کرانا ہوگی کہ آئندہ ایسا نہ ہو۔

بھارت میں اس سے قبل بھی نصابی کتابوں میں سنگین قسم کی غلطیاں کی جاتی رہی ہیں، گزشہ ماہ نویں جماعت کی نصابی کتاب میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی شان میں گستاخی کی گئی تھی جس کی نشاندہی پر اسکول اور پبلشر کو معافی مانگنا پڑی۔

اسی قسم کی ایک غلطی اس وقت ہوئی جب ایک نصابی کتاب میں گوشت کھانے والوں کو جھوٹ، دھوکے بازی اور جنسی جرائم کا عادی قرار دیا گیا تھا۔

About samad chishti

Share your Comments

comments